د : پوری دنیا کی اصلاح

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
اهداف قیام حسینى
دوسرا مقصد : امربالمعروف ونہی عن المنکرج : امتوں کے امور کی اصلاح

ذاتی ، خاندانی اور مختلف معاشروں کی اصلاح سے زیادہ زمین پر بسنے والے تمام لوگوں کی اصلاح ہے جس کو قرآن کریم نے سورہ اعراف کی ۵۶ ویں آیت میں بیان کیا ہے :

وَ لا تُفْسِدُوا فِی الْاٴَرْضِ بَعْدَ إِصْلاحِہا وَ ادْعُوہُ خَوْفاً وَ طَمَعاً إِنَّ رَحْمَتَ اللَّہِ قَریبٌ مِنَ الْمُحْسِنینَ “ ۔ اور خبردار زمین میں اصلاح کے بعد فساد نہ پیدا کرنا اور خدا سے ڈرتے ڈرتے اور امیدوار بن کر دعا کرو، بیشک اس کی رحمت نیک عمل کرنے والوں سے زیادہ قریب ہے(۱) ۔
خلاصہ یہ ہے کہ خداوند عالم نے زندگی کے تمام پہلووں کو واضح طور پر قرآن کریم میں بیان کر دیا ہے ، اور پوری امت خصوصا ذمہ داران کو اس کا حکم دیا ہے ۔

 


 

۱۔ سورہ اعراف کی ۸۵ ویں آیت میں اسی طرح کی بات ذکر ہوئی ہے ۔


دوسرا مقصد : امربالمعروف ونہی عن المنکرج : امتوں کے امور کی اصلاح
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma