۱ ۔ سلا ہوا لباس پہننا ( مردوں کے لئے )

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
مناسک عمره مفرده
۲ ۔ کسی ایسی چیز کا پہننا جو تمام پست پا کو چھپا لے ( مردوں کے لئے ) محرمات احرام

مسئلہ 126 ۔ پیراہن ، قبا ، کوٹ پینٹ ، بنیائن ، شرٹ ، کرتا اور پائجامہ جیسے لباسوں کا پہننا مردوں پر حرام ہے بلکہ احتیاط واجب یہ ہے کہ ہر سلے ہوئے لباس سے اجتناب کرے ، اسی طرح بنے ہوئے لباسوں یا ایسے لباس جن کے ٹکروں کو آپس میں چسپاں کردیتے ہیں یا نمد کی طرح درست کرتے ہیں اور پیراہن ، کوٹ ، جیکٹ اور گرمکن یا اس کے مانند کی صورت ہے ہر چند سلا ہوا نہ ہو اور سوئی اور دھاگا اس میں استعمال نہ ہوا ہو ، احتیاط واجب یہ ہے کہ ان سب سے اجتناب کیا جائے .
مسئلہ 127 ۔ سلے ہوئے لباس میں چھوٹے اور بڑے کے درمیان کوئی فرق نہیں ہے ، لیکن سردی وغیرہ سے بچنے کے لئے دوش پر ایسے کمبلوں کا ڈالنا جن کے اطراف ( باڈر ) سلے ہوئے ہیں (شرط یہ ہے کہ اس سے اپنے سر کو نہ ڈھانپے ) بلا مانع ہے اور اس میں کوئی مضائقہ نہیں ہے ، بلکہ اگر احرام کے کنارے بھی سِلے ہوئے ہوں تو کوئی نقصان نہیں ہے ہر چند احتیاط مستحب اس کا ترک کرنا ہے .
مسئلہ 128 ۔ کمر پر ہمیان (۱) ( تھیلی ) باندھنے میں کوئی مضائقہ نہیں ہے ، اسی طرح احرام کے اوپر کمر بند باندھنے میں بھی کوئی حرج نہیں ہے خواہ سلا ہوا ہو یا بغیر سلا ہو ہو احرام کے اوپر سلی ہوئی شال باندھنے میں بھی کوئی مضائقہ نہیں ہے لیکن ان تمام چیزوں میں احتیاط مستحب یہ ہے کہ سلی ہوئی نہ ہوں.
مسئلہ 129 ۔ فتق بند ( پٹی ) سے استفادہ کرنا ہر چند دوختہ ہو بلا مانع ہے . اسی طرح سلا ہوا بیگ کہ کبھی کبھی گردن یا شانے پر لٹکاتے ہیں . اور قمقمہٴ آب کہ سلے ہوئے بستہ میں ہوتا ہے نقصان دہ نہیں ہے .
مسئلہ 130 ۔ جیسا کہ باب احرام میں عرض کیا احتیاط واجب یہ ہے کہ احرام کی لنگی کو گردن میں گرہ نہ لگائیں ، لیکن اس کو کمر کے گرد گرہ لگانا بالخصوص جہاں پر کہ اس کی ضرورت ہو . اسی طرح رداء کو گرہ لگانا یا اس کی نگہداشت کے لئے سنجاق سے استفادہ کرنا یا لنگی بلا مانع ہے ، لیکن بہتر اس کا ترک کرنا ہے ، اور جو بعض حجاج کے درمیان معمول اور رائج ہے کہ ایک سنگ تولیہ کے کنارے رکھ کر دھاگا کے ذریعہ اس کو دوسری طرح باندھ دیتے ہیں ، وہ بھی جائز ہے . او ربہترین ترکیب لنگی کی حفاظت کے لئے کمر بند سے استفادہ کرنا ہے .
مسئلہ 131 ۔ عورتوں کے لئے انواع و اقسام کے سلے ہوئے لباس پہننا بلا مانع ہے مگر دستکش جائز نہیں ہے ہر چند سلی ہوئی نہ ہو .
مسئلہ 132 ۔ جو شخص عمدا سلا ہوا لباس پہنے اس کا کفارہ ایک گوسفند ہے لیکن اگر جہالت یا نسیان کی وجہ سے ہو تو کوئی بات نہیں ہے .
مسئلہ 133 ۔ اضطراری صورت میں سلا ہوا لباس پہننا حرام نہیں ہے لیکن موجب کفارہ ضرور ہے.
مسئلہ 134 ۔ اگر محرم کئی عدد سلے ہوئے لباس پہنے تو لازم ہے کہ ہر لباس کے عوض ایک کفارہ دے ، احتیاط واجب یہ ہے کہ اگر ان کو ایک کے اوپر ایک رکھ کر ایک ساتھ پہن لے تو بھی ہر ایک کے لئے جدا گانہ کفارہ دے .
مسئلہ 135 ۔ اگر اضطرار کی وجہ سے متعدد لباس پہنے ، کفارہ ساقط نہیں ہوگا مگر یہ کہ کفارہٴ متعدّد عسر و حرج کا باعث ہو .
مسئلہ 136 ۔ اگر کوئی لباس ، مثلا پیراہن پہنے اور اس کا کفارہ ادا کرے اور دوبارہ دوسرا پیراہن پہنے یا اسی پہلے والے پیراہن کو اتارنے کے بعد دوبارہ زیب تن کرے تو چاہئے کہ دو کفارہ ادا کرے .
سوال 137 ۔ کیا محرم مرد سردی سے بچنے کے لئے اس کمبل سے جس کا حاشیہ اور کنارہ سلا ہوا ہے استفادہ کر سکتے ہیں ؟
جواب : کوئی مضائقہ نہیں ہے اور اس پر سلے ہوئے لباس کا حکم جاری نہیں ہوگا .
سوال 138 ۔ کیا سلے ہوئے لباس سے مراد ( کہ حالت احرام میں مردوں پر حرام ہے ) ایسا سلنا ہے کہ آپس میں جدا کپڑے کے ٹکڑوں کو بہم وصل کرتے ہیں یا حتیٰ اگر احرام کی تولیہ پر بھی سلائی کردیں تو اشکال ہے .
جواب : اس طرح کے سلنے میں کوئی اشکال نہیں ہے .
سوال 139 ۔ کیا مصنوعی ہاتھ اور پیر استعمال کرنا کہ سلے ہوئے چمڑوں کے بدن پر باندھتے ہیں محرم جانبازوں او رمعلولین کے لئے جائز ہے ؟
جواب : کوئی اشکال نہیں ہے اور کفارہ بھی نہیں ہے .
سوال 140 ۔ کیا محرم عورتوں کے لئے ایسے لباسوں کا پہننا کہ جن کے بعض حصوں میں زینت کے لئے کڑھائی یا گلو وزی کی گئی ہے جائز ہے ؟ اور کیا مقنعہ جزء لباس ہے ؟

 


(۱) ہمیان . جو چیز کمر پر باندھتے ہیں اور اس میں پیسہ اور ضروری کا غذات وغیرہ رکھتے ہیں .
 
۲ ۔ کسی ایسی چیز کا پہننا جو تمام پست پا کو چھپا لے ( مردوں کے لئے ) محرمات احرام
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma