سوره محمد/ آیه 25- 28

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 21

۲۵۔إِنَّ الَّذینَ ارْتَدُّوا عَلی اٴَدْبارِہِمْ مِنْ بَعْدِ ما تَبَیَّنَ لَہُمُ الْہُدَی الشَّیْطانُ سَوَّلَ لَہُمْ وَ اٴَمْلی لَہُمْ ۔
۲۶۔ ذلِکَ بِاٴَنَّہُمْ قالُوا لِلَّذینَ کَرِہُوا ما نَزَّلَ اللَّہُ سَنُطیعُکُمْ فی بَعْضِ الْاٴَمْرِ وَ اللَّہُ یَعْلَمُ إِسْرارَہُمْ ۔
۲۷۔فَکَیْفَ إِذا تَوَفَّتْہُمُ الْمَلائِکَةُ یَضْرِبُونَ وُجُوہَہُمْ وَ اٴَدْبارَہُمْ ۔
۲۸۔ ذلِکَ بِاٴَنَّہُمُ اتَّبَعُوا ما اٴَسْخَطَ اللَّہَ وَ کَرِہُوا رِضْوانَہُ فَاٴَحْبَطَ اٴَعْمالَہُمْ ۔

ترجمہ

۲۵۔جولوگ حق کے واضح ہوجانے کے بعد بھی اُلٹے پاؤں پھر گئے ہیں شیطان نے اِن بُرے اعمال کوان کی نگاہوں میں بناسجا کرپیش کیا ہے اورانہیں لمبی آرزوؤںپر فریفتہ کیا ہے ۔
۲۶۔یہ اس لیے ہے کہ جونزُول وحی کوناپسند کرتے ہیں اُنہوں نے کہاکہ بعض کاموں میں ہم تمہار ی پیروی کریں گے ، جب کہ خدا ان کے رازوںسے آگاہ ہے ۔
۲۷۔اس وقت ان کاکیا حال ہوگا جب (موت کے )فرشتے ان کے چہروں اوران کی پشت پر مار تے ہوں گے ( اور ان کی رُوح قبض کریں گے ) ۔
۲۸۔یہ سب اس وجہ سے ہے کہ جس چیز سے خدا ناخوش ہے ، اس کی تو یہ لوگ پیروی کرتے ہیں اور جس میںخدا کی خُوشی ہے اس سے بیزار ہیں ،لہذا خدا نے ان کے سب اعمال اکارت کردیئے ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma