سوره النجم/ آیه 24- 26

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 22

٢٤۔أَمْ لِلِْنْسانِ ما تَمَنَّی۔
٢٥۔فَلِلَّہِ الْآخِرَةُ وَ الْأُولی۔
٢٦۔ وَ کَمْ مِنْ مَلَکٍ فِی السَّماواتِ لا تُغْنی شَفاعَتُہُمْ شَیْئاً ِلاَّ مِنْ بَعْدِ أَنْ یَأْذَنَ اللَّہُ لِمَنْ یَشاء ُ وَ یَرْضی۔

ترجمہ

٢٤۔کیاجوکچھ انسان آروز رکھتاہے وہ اسے مل جاتا ہے؟
٢٥۔حالانکہ آخرت بھی اور دنیابھی خداہی کے لیے ہے ۔
٢٦۔اور کتنے ہی زیادہ فرشتے آسمانوں میں ایسے ہیں جن کی شفاعت کوئی فائدہ نہیں دیتی ،مگراس کے بعد کہ خدا جس کے لیے چاہے اس سے راضی ہوک ہ(شفاعت کرنے کی ) اجازت دے دے ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma