سوره «ق»/ آیه 12- 15

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 22

١٢۔کَذَّبَتْ قَبْلَہُمْ قَوْمُ نُوحٍ وَ أَصْحابُ الرَّسِّ وَ ثَمُودُ ۔
١٣۔وَ عاد وَ فِرْعَوْنُ وَ ِخْوانُ لُوطٍ ۔
١٤۔وَ أَصْحابُ الْأَیْکَةِ وَ قَوْمُ تُبَّعٍ کُلّ کَذَّبَ الرُّسُلَ فَحَقَّ وَعیدِ ۔
١٥۔ أَ فَعَیینا بِالْخَلْقِ الْأَوَّلِ بَلْ ہُمْ فی لَبْسٍ مِنْ خَلْقٍ جَدیدٍ ۔

ترجمہ

١٢۔اُن سے پہلے قوم نوح اوراصحاب الرس ( وہ قوم جویمامہ میں رہتی تھی، اوراُن کی طرف ایک پیغمبرآ یاتھا، جس کانام حنظلہ تھا)اورقوم ثمودنے بھی ( اپنے پیغمبروں کی تکذیب کی تھی ) ۔
١٣۔اوراسی طرح قوم عاد اور فرعون اورقومِ لوط۔
١٤۔اوراصحاب الایکہ (قومِ شعیب)اورقوم تبع ( جو سرزمین یمن میں رہتی تھی )ان میں سے ہر ایک نے خدا کے بھیجے ہُوئے پیغمبروں کی تکذیب کی ، اورعذاب کاوعدہ ان کے بارے میں پورا ہو کررہا ۔
١٥۔کیاہم پہلی خلقت اسے عاجز آ گئے ہیں( کہ معاد کی خلقت پر قادرنہ ہوں)لیکن وہ(ان تمام واضح و روشن دلائل کے باوجود)پھر بھی نئی خلقت میں شک وتردید رکھتے ہیں ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma