سوره «ق»/ آیه 1- 5

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 22
بِسْمِ اللَّہِ الرَّحْمنِ الرَّحیمِ
١۔ق وَ الْقُرْآنِ الْمَجیدِ ۔
٢۔بَلْ عَجِبُوا أَنْ جاء َہُمْ مُنْذِر مِنْہُمْ فَقالَ الْکافِرُونَ ہذا شَیْء عَجیب ۔
٣۔أَ ِذا مِتْنا وَ کُنَّا تُراباً ذلِکَ رَجْع بَعید ۔
٤۔ قَدْ عَلِمْنا ما تَنْقُصُ الْأَرْضُ مِنْہُمْ وَ عِنْدَنا کِتاب حَفیظ ۔
٥۔بَلْ کَذَّبُوا بِالْحَقِّ لَمَّا جاء َہُمْ فَہُمْ فی أَمْرٍ مَریج

ترجمہ

١۔ ق، قرآن مجید کی قسم ۔
٢۔ انہوں نے (اس بات پر ) تعجب کیاکہ انہیں کے درمیان میں سے ایک ڈ رانے والا پیغمبرآ یاہے، اورکافروں نے یہ کہا، : یہ توایک عجب چیزہے ۔
٣۔ کیاجب ہم مرجائیں گے اورخاک ہوجائیں گے ،تو دوبارہ زندہ کیے جائیں گے،یہ بازگشت توبہت ہی بعید ہے ۔
٤۔ لیکن ہم جانتے ہیں جوکچھ زمین ان کے بدن میں سے کم کرتی ہے اورہمارے پاس وہ کتاب ہے جس میں ہرچیز محفوظ ہے ۔
٥۔ جب حق ان کے پاس آ یاتو انہوں نے اس کی تکذیب دکی ، لہٰذا وہ اپنے پراگندہ کام میں حیران ومتحیر ہیں ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma