سوره فتح/ آیه 28- 29

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 22

٢٨۔ہُوَ الَّذی أَرْسَلَ رَسُولَہُ بِالْہُدی وَ دینِ الْحَقِّ لِیُظْہِرَہُ عَلَی الدِّینِ کُلِّہِ وَ کَفی بِاللَّہِ شَہیداً ۔
٢٩۔ مُحَمَّد رَسُولُ اللَّہِ وَ الَّذینَ مَعَہُ أَشِدَّاء ُ عَلَی الْکُفَّارِ رُحَماء ُ بَیْنَہُمْ تَراہُمْ رُکَّعاً سُجَّداً یَبْتَغُونَ فَضْلاً مِنَ اللَّہِ وَ رِضْواناً سیماہُمْ فی وُجُوہِہِمْ مِنْ أَثَرِ السُّجُودِ ذلِکَ مَثَلُہُمْ فِی التَّوْراةِ وَ مَثَلُہُمْ فِی الِْنْجیلِ کَزَرْعٍ أَخْرَجَ شَطْأَہُ فَآزَرَہُ فَاسْتَغْلَظَ فَاسْتَوی عَلی سُوقِہِ یُعْجِبُ الزُّرَّاعَ لِیَغیظَ بِہِمُ الْکُفَّارَ وَعَدَ اللَّہُ الَّذینَ آمَنُوا وَ عَمِلُوا الصَّالِحاتِ مِنْہُمْ مَغْفِرَةً وَ أَجْراً عَظیماً۔

ترجمہ

٢٨۔ وہ وہی ہے جس نے اپنے رسُول کوہدایت اور دین حق کے ساتھ بھیجا .تاکہ اُسے تمام دینوں اورکامیابی دے . اوراس بات کے لیے خدا کی گواہی کافی ہے ۔
٢٩۔محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)خدا دکے رسُول ہیں، اورجولوگ اُس کے ساتھ ہیں وہ کفّار کے مقابلہ میںسخت اور آپس میں مہر بان ہیں تو انہیں ہمیشہ رکوع اورسجدے میں دیکھتاہے .وہ ہمیشہ خدا کے فضل اوراس کی رضا کوطلب کرتے ہیں ، ان کی نشانی ان کے چہرے پہ سجدہ کے اثر سے نما یاں ہے ،یہ تعریف وتوصیف توان کی تورات میں ہے اورانجیل میں ان کی توصیف یہ ہے کہ و ہ ایسی زراعت کے مانند ہیں .جس نے اپنی کونپلیں نکالی ہیں . پھر وہ قوت حاصل کرکے مضبوط اورمحکم ہوگئی اوراپنے پائوں پرکھڑ ی ہوگئی ،اوراس قدر نشو ونما کی کہ زراعت کرنے والوں کو حیران کردیا. یہ اس بناء پر ہے کہ کافروں کوغصّہ دلائے ،خدانے ان میں ایسے لوگوں سے جو ایمان اور عمل صالح بجا لائے بخشش اوراجر عظیم کاوعدہ کیاہے ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma