قیامت کی نشانیاں ظاہر ہوچکی ہیں:

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 21
یہ آیا ت وحی الہٰی ، آیات قرآنی اوراحادیث نبوی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کے بارے میں منافقین کی کیفیت کی تصویر کشی اور دشمنانِ اسلام کے ساتھ جنگ و جہاد کے مسئلے کو بیان کررہی ہیں ۔
مدنی سُورتوں میں منافقین کابہت تذ کرہ ملتا ہے جب کہ مکّی سُور توں میں ایسانہیںہے ، کیونکہ فقت اور نفاق کامسئلہ اسلام کی کامیابی اوراس کے مکمل طورپر مسلط ہوجانے کے بعد پیدا ہوا ،کیونکہ مخالفین کی طاقت کمزور ہو گئی تھی اوروہ کھلم کھلا طورپر اسلام کی مخالفت نہیں کرسکتے تھے ، لہذا وہ بظا ہر اسلام کالبادہ اوڑھ کراسلام کے دائر ے میں در آ ئے تاکہ اس طرح سے وہ مسلمانوں کے غیظ وغضب سے بچے رہیں ،لیکن باطنی طورپر مختلف سازشوں میں مصروف رہے ، مدینہ کے یہودی جوفوجی اوراقتصادی لحاظ سے بہت طاقت ورتھے وہ بھی منافقین کے پشت پنا ہ ثابت ہوئے ۔
بہرحال ،وہ سچے موٴ منین کی صفوں میںگھُس آ ئے ،نماز جمعہ اور دیگر اجتما عات میں سول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی خدمت میں حاضرہوتے ،لیکن قرآنی آیات کے مقابلے مین ان کا ردّ عمل ان کے دلوں کی بیماری کا آئینہ دار ہوتا۔
اس لیے زیر تفسیرآیات میں سے پہلی آیت میں فر مایاگیا ہے : ان میں سے کچھ لوگ تیرے پاس آ تے ہیں ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma