۳۔ خراب نه ہونے والے مشرو بات :

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 21

بہشت کی نہروں کی ایک مرتبہ توغیراٰسن (اس کی بُونہیں بدلی ) کے ساتھ اور دوسری مرتبہ ” لھ یتغیر طعمہ“(اس کاذائقہ نہیں بدلا) کے ساتھ تعریف وتوصیف کی گئی ہے ، جس سے پتہ چلتا ہے کہ بہشت کے مشرو بات اور غذ ائیں ہمیشہ تر و تازہ رہیں گی ، پہلے دن کی سی تاز گی ․ آخرایساکیوں نہ ہو ، جب کہ خوارک کاتغیر اوراس میں خرابی جراثیم کی وجہ سے عمل میں آ تی ہے ، اگریہ دُنیا میں نہ ہوتے توکسی چیز میں کوئی خرابی پیدانہ ہوتی اور ہر چیز اپنی اصلی حالت پر باقی رہتی ، ،لیکن چونکہ بہشت خرابی پیدا کرنے والوں کی جگہ نہیں ہے ،لہذا وہاں ہرچیزپاک، صاف ،صحیح وسالم اور تر وتازہ رہے گی ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma