۱۔ خواہشات نفسانی سب سے زیادہ خطرناک بُت ہے :

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 21
ہم ابھی حدیث میںپڑھ چکے ہیں کہ اللہ تعالیٰ کے نزدیک سب بتوں سے ناپسندیدہ بُت کہ جس کی عبادت کی جاتی ہے نفس پر ستی کا بت ہے ۔
اس بات میں ذرہ بھرمبالغہ نہیں ہے ،کیونکہ عام قسم کے بُت ایسی چیز یں ہیں ،جن کی اپنی کوئی خاصیّت اورخصو صیت نہیں ہوتی ،لیکن خواہشات نفسانی کابُت گمراہ کُن ہے اور مختلف گناہوں اور گمراہیوں اور بے راہر وی کی جانب لے جاتاہے ۔
مجموعی طورپر کہاجا سکتاہے کہ اِس بُت میں وہ خصوصیات پائی جاتی ہیں جنہوں نے اسے سب سے زیادہ قابلِ نفرت بُت کے نام کامستحق بنادیا ہے ۔
یہ بُت برائیوں کوانسان کی نگاہ میں اتنا مزین کردیتاہے کہ وہ اپنے بُرے کارناموں پرفخر کرتادکھائی دیتاہے اور :”وَ ہُمْ یَحْسَبُونَ اٴَنَّہُمْ یُحْسِنُونَ صُنْعا“ (کہف / ۱۰۴) ۔
کے مصداق انسان اسے صالح العمل سمجھ کرفخر کرتاہے ۔

۲۔ شیطان کے لیے موثر ترین راستہ :

شیطان کے عمل دخل کاموٴ ثر ترین راستہ خواہشات کی اطاعت ہے ،کیونکہ جب تک انسان کے اند رونی وجود میں شیطان کاٹھکانا ہوا س وقت تک وہ دلوں میں وسوسے پیدانہیں کرسکتا اوروہ ٹھکانا نفس پرستی کے سو ااورکچھ نہیں ، وہی چیز کہ خود شیطان جس کی وجہ سے اپنے مقام سے گرِ گیااور فرشتوں کی صف اورقر بِ الہٰی سے راندہ گیا ۔

۳۔ نفس پر ستی ہدایت سے محر ومی کاسبب :

نفس پرستی حقائق کے صحیح ادراک جیسے ہدایت کے اہم ترین ذریعے کو انسان سے سلب کرلیتی ہے اورانسان کی آنکھوں اورعقل پرپردے ڈال دیتی ہے .جیساکہ زیر تفسیرآ یات میں نفس پرستی کے مسئلے کو بیان کرنے کے بعد صاف طورپر اس بات کی طرف اشارہ کیاگیاہے اور قرآن کی بہت سی دوسری آ یات بھی اس حقیقت کی گواہ ہیں ۔
۴۔ خداکے مقابل :نفس پر ستی انسان کو (نعوذ باللہ ) خداسے مقابلے کے مرحلے تک لے جاتی ہے ، جیساکہ خواہش پر ستوں کاپیشوایعنی شیطان اس منحوس انجام سے دوچار ہوٴ ا اور آدم علیہ السلام کوسجدہ کرنے کے مسئلے پراُس نے حکمت خداوندی پراعراض کیا، اور اسے غیر حکیمانہ سمجھا ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma