سوره شوری/ آیه 32- 36

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 20
سوره فصلت/ آیه 1- 5

۳۲۔ وَ مِنْ آیاتِہِ الْجَوارِ فِی الْبَحْرِ کَالْاٴَعْلامِ ۔
۳۳۔إِنْ یَشَاٴْ یُسْکِنِ الرِّیحَ فَیَظْلَلْنَ رَواکِدَ عَلی ظَہْرِہِ إِنَّ فی ذلِکَ لَآیاتٍ لِکُلِّ صَبَّارٍ شَکُورٍ ۔
۳۴۔ اٴَوْ یُوبِقْہُنَّ بِما کَسَبُوا وَ یَعْفُ عَنْ کَثیرٍ ۔
۳۵۔ وَ یَعْلَمَ الَّذینَ یُجادِلُونَ فی آیاتِنا ما لَہُمْ مِنْ مَحیصٍ ۔
۳۶۔ فَما اٴُوتیتُمْ مِنْ شَیْء ٍ فَمَتاعُ الْحَیاةِ الدُّنْیا وَ ما عِنْدَ اللَّہِ خَیْرٌ وَ اٴَبْقی لِلَّذینَ آمَنُوا وَ عَلی رَبِّہِمْ یَتَوَکَّلُونَ۔

ترجمہ

۳۲۔ اس کی نشا نیوں میں سے وہ کشتیاں ہیں جو پہاڑ وں کی طرح سمندر میں رواں دواں ہیں۔
۳۳۔ اگروہ چاہے تو ہو ا کو روک دے اور یوں وہ کشتیاں پشت سمندر پرر کھی رہیں ،اس میں ہرصبر اور شکر کرنے والے کے لیے نشانیاں ہیں۔
۳۴۔ یااگروہ چاہے تو ان میں سوار افراد کے انجام شدہ اعمال کی وجہ سے انہیں بتاہ کردے ،جبکہ وہ بہت سے لوگوں کومعاف کردیتاہے۔
۳۵۔ تاکہ جولوگ ہماری آیات کے بار ے میں جھگڑا کرتے ہیں وہ یہ بات جان لیں کہ ان کی کوئی پناہ گا ہ نہیں ہے۔
۳۶۔ جوچیز تمہیں عطاکی گئی ہے وہ دنیا وی زندگی کا ناپائیدا ر مال ومتاع ہے اورجوکچھ پروردگار کے پاس ہے وہ ایمانداروں اوراپنے رب پر بھر وسہ کرنے والوں کے لیے زیادہ بہتر اور زیادہ پائیدار ہے۔
سوره فصلت/ آیه 1- 5
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma