سوره فصلت/ آیه 49- 52

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 20
سوره فصلت/ آیه 1- 5

۴۸۔لا یَسْاٴَمُ الْإِنْسانُ مِنْ دُعاء ِ الْخَیْرِ وَ إِنْ مَسَّہُ الشَّرُّ فَیَؤُسٌ قَنُوطٌ ۔
۵۰۔وَ لَئِنْ اٴَذَقْناہُ رَحْمَةً مِنَّا مِنْ بَعْدِ ضَرَّاء َ مَسَّتْہُ لَیَقُولَنَّ ہذا لی وَ ما اٴَظُنُّ السَّاعَةَ قائِمَةً وَ لَئِنْ رُجِعْتُ إِلی رَبِّی إِنَّ لی عِنْدَہُ لَلْحُسْنی فَلَنُنَبِّئَنَّ الَّذینَ کَفَرُوا بِما عَمِلُوا وَ لَنُذیقَنَّہُمْ مِنْ عَذابٍ غَلیظٍ ۔
۵۱۔ وَ إِذا اٴَنْعَمْنا عَلَی الْإِنْسانِ اٴَعْرَضَ وَ نَاٴی بِجانِبِہِ وَ إِذا مَسَّہُ الشَّرُّ فَذُو دُعاء ٍ عَریضٍ ۔
۵۲۔ قُلْ اٴَ رَاٴَیْتُمْ إِنْ کانَ مِنْ عِنْدِ اللَّہِ ثُمَّ کَفَرْتُمْ بِہِ مَنْ اٴَضَلُّ مِمَّنْ ہُوَ فی شِقاقٍ بَعیدٍ ۔

ترجمہ

۴۹۔ انسان کبھی بھی نیکی ( اور نعمت ) کی دعا سے نہیں تھکتا ، اور جب کسی برائی سے دوچار ہوتا ہے تو مایوس اور نااُمید ہوجاتاہے۔
۵۰۔ اور جب ہم اسے کسی مصیبت کے بعد اپنی رحمت ( کالطف ) چکھاتے ہیں تو کہتاہے کہ یہ تومیری لیاقت اوراستحقاق کی بناپر تھا اور میراگمان نہیں ہے کہ قیامت برپا ہوگی ( اور بالفرض قیامت ہوبھی تو) جس دن میں اپنے پر وردگار کی طرف لوٹ کرجاؤ ں گا تو اس کے نزدیک میرے لیے اچھی جزاہے لیکن کافروں نے جواعمال انجام دیئے ہیں ہم انہیں ( بہت جلد )آگاہ کردیں گے اورانہیں عذاب شدید چکھا ئیں گے۔
۵۱۔ اورجب ہم کسی انسان کوکوئی نعمت عطاکرتے ہیں توو ہ منہ پھیر لیتاہے اور تکبّر کی حالت میں حق سے دور ہوجاتاہے . لیکن جب بھی اسے تھوڑ ی سی تکلیف پہنچے تو ( اس کے دور ہونے کے لیے ) لمبی چوڑی دعائیں مانگتاہے۔
۵۲ ۔ کہہ دے : مجھے بتاؤ ، اگر یہ قرآن خداکی طرف سے ہو اور تم اس کانکار کرو تو اس سے مخالفت کرنے والوں سے بڑھ کرکون شخص گمراہ ہوگا ؟
سوره فصلت/ آیه 1- 5
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma