۳۔ ” کنتم توعدون “ ( تم وعدہ دیئے جاتے تھے ) :

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 20
سوره فصلت/ آیه 1- 5
” کنتم توعدون “ ( تم وعدہ دیئے جاتے تھے ) کی تعبیرایک نہایت ہی جامع ہے جو بااستقامت موٴ منین کی نگاہوں میں بہشت کے تمام اوصاف کومجتمع کردیتی ہے . یعنی بہشت اپنے تمام اوصاف کے ساتھ تمہیں ملے گی . حور وقصور ، روحانی اورنہایت ہی قیمتی نعمتوں سمیت تمہارے اوصا ف کے ساتھ تمہیں ملے گی . حور و قصور ،روحانی اورنہایت ہی قیمتی نعمتوں سے تمہارے اختیار میں ہوگی . ایسی نعمتیں کہ بقول قرآن کوئی شخص بھی اس قطعاً آگاہ نہیں ہے اور نہ ہی کسی کے ذہن میں آئی ہیں”فلاتعلم نفس مااخفی لھم من قرة اعین “ ۔ (السجدہ . ۱۷)
سوره فصلت/ آیه 1- 5
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma