سوره زخرف/ آیه 33- 35

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 21

۳۳۔ وَ لَوْ لا اٴَنْ یَکُونَ النَّاسُ اٴُمَّةً واحِدَةً لَجَعَلْنا لِمَنْ یَکْفُرُ بِالرَّحْمنِ لِبُیُوتِہِمْ سُقُفاً مِنْ فِضَّةٍ وَ مَعارِجَ عَلَیْہا یَظْہَرُونَ ۔
۳۴۔ وَ لِبُیُوتِہِمْ اٴَبْواباً وَ سُرُراً عَلَیْہا یَتَّکِؤُنَ ۔
۳۵۔ وَ زُخْرُفاً وَ إِنْ کُلُّ ذلِکَ لَمَّا مَتاعُ الْحَیاةِ الدُّنْیا وَ الْآخِرَةُ عِنْدَ رَبِّکَ لِلْمُتَّقینَ ۔
ترجمہ

۳۳۔ اگر کفار کامادی وسائل سے استفادہ اس بات کاسبب نہ ہوتا کہ گمراہی میں سب لوگ ایک ہی طریقے کے ہو جائیں گے توہم ان کے لیے جوخدا کاانکار کرتے ہیں گھروں کی چھتیں چاندی کی بنادیتے اور وہ سیڑ ھیاں بھی جن پر وہ چڑ ھتے ہیں ۔
۳۴۔ اوران کے گھروں کے در وازے او ر وہ ( خوبصورت نقرئی ) تخت جن پر وہ تکیہ لگا تے ہیں ۔
۳۵۔ اور زیب وزینت کے دوسر ے وسائل بھی ، لیکن یہ سب کُچھ توصرف دنیاوی زندگی کے سازو سامان ہیں اور آخر ت تو تیرے پروردگار کے نز د یک صرف پرہیز گاروں کے لیے ہے ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma