سوره مؤمن/ آیه 34- 35

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 20
جابر حکمرا ن صحیح فہم سے محروم ہیںمیں تمہیں خبر دار کرتاہوں !

۳۴۔وَ لَقَدْ جاء َکُمْ یُوسُفُ مِنْ قَبْلُ بِالْبَیِّناتِ فَما زِلْتُمْ فی شَکٍّ مِمَّا جاء َکُمْ بِہِ حَتَّی إِذا ہَلَکَ قُلْتُمْ لَنْ یَبْعَثَ اللَّہُ مِنْ بَعْدِہِ رَسُولاً کَذلِکَ یُضِلُّ اللَّہُ مَنْ ہُوَ مُسْرِفٌ مُرْتابٌ ۔
۳۵۔ الَّذینَ یُجادِلُونَ فی آیاتِ اللَّہِ بِغَیْرِ سُلْطانٍ اٴَتاہُمْ کَبُرَ مَقْتاً عِنْدَ اللَّہِ وَ عِنْدَ الَّذینَ آمَنُوا کَذلِکَ یَطْبَعُ اللَّہُ عَلی کُلِّ قَلْبِ مُتَکَبِّرٍ جَبَّارٍ۔

ترجمہ

۳۴۔ اس سے پہلے یوسف تمہارے پاس روشن دلائل لے کر آئے لیکن تم نے اس کی لائی ہوئی چیز وں میں اسی طرح شک کیا ، یہاں تک کہ وہ اس دنیا سے سد ھارے ، تم نے کہ اکہ اس کے بعد خداقطعاً کسی کو رسول بناکر نہیں بھیجے گا ، خدا اسی طرح ہراسراف کرنے والے اور شک کرنے والے کوگمراہ کرتاہے ۔
۳۵۔ جولوگ خدا کی آیات کے بار ے میں مجادلہ کرتے ہیں بغیراس کے کہ ان کے پاس کوئی دلیل آئی ہو ان کا یہ کام خدا کے اوران کے شدید غضب کاموجب ہے جو ایمان لائے ہیں . اسی طرح خدا ہر متکبر جبار کے دل پر مہر لگادیتاہے ۔
جابر حکمرا ن صحیح فہم سے محروم ہیںمیں تمہیں خبر دار کرتاہوں !
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma