۳ صدیقین کون ہیں ؟

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 20
سوره مؤمن/ آیه 30- 33۲۔ تقیّہ ... مقابلے کاایک موٴثر ذریعہ

پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بعض احادیث میں ہے کہ
الصدیقون ثلاث ” حبیب النجار “ موٴ من آل یٰس الذی یقول ” فاتبعو االمرسلین اتبعوامن لایسئلکم اجراً “ و ” حز قیل “ موٴ من اٰل فرعون ، و ” علی بن ابی طالب (ع) “ وھوا فضلھم
” سب سے پہلے (بزرگ انبیاء کی ) تصدیق کرنے والے تین لوگ ہیں حبیب نجار موٴ من آل یٰس جس نے ( انطاکیہ ) کے لوگوں سے کہا خدا کے رسولوں کی پیروی کرو،ان لوگوں کی اتباع کرو جوتم سے کسی قسم کی اجرت بھی نہیں مانگتے اورخود ہدایت یافتہ ہیں اورحز قتل موٴ من آل ِ فرعون اور علی بن ابی طالب جوان سب سے افضل اور بر تر ہیں “ ۔
یہ حدیث شیعہ اورسنی دونوں مذاہب کی کتابوں میں موجود ہے ( 1)۔
سچ بات بھی یہی ہے کہ ان افراد نے خداکے انبیاء کی اس وقت تصدیق کی اوران پر ایمان کا اظہار کیا جب انبیاء کے لیے زبردست بحرانی لمحات تھے انہوں نے اس وقت اور بحرانی لمحوں میں پیش قدمی کی اورصحیح معنوں میں ”صدیق “ کہلانے کے حقدار ہیں. یہ ان لوگوں کے سرخیل ہیں جنہوں نے خداکے انبیاء کی تصدیق کی خصوصاً علی بن ابی طالب علیہ السلام اکہ جنہوں نے اپنی ساری زندگی وقف ہی پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے لیے کر دی تھی . آپ علیہ السلام نے خود پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی زندگی بلکہ ان کی رحلت کے بعد ایثار وفدا کاری کی ایسی روشن مثالیں قائم کیں جو رہتی دنیاتک یاد گار رہیں گی ۔
 1۔ ملاحظہ ہو ” امالی شیخ صدوق “ اورابن حجرکی کتاب ”صواعق محرقہ “ فصل ثانی باب ۹۔
سوره مؤمن/ آیه 30- 33۲۔ تقیّہ ... مقابلے کاایک موٴثر ذریعہ
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma