سوره مؤمن/ آیه 18- 20

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 20
جب جان لبوں تک پہنچے گی ملاقات کا دن

۱۸۔ وَ اٴَنْذِرْہُمْ یَوْمَ الْآزِفَةِ إِذِ الْقُلُوبُ لَدَی الْحَناجِرِ کاظِمینَ ما لِلظَّالِمینَ مِنْ حَمیمٍ وَ لا شَفیعٍ یُطاعُ ۔
۱۹۔ یَعْلَمُ خائِنَةَ الْاٴَعْیُنِ وَ ما تُخْفِی الصُّدُورُ ۔
۲۰۔ وَ اللَّہُ یَقْضی بِالْحَقِّ وَ الَّذینَ یَدْعُونَ مِنْ دُونِہِ لا یَقْضُونَ بِشَیْء ٍ إِنَّ اللَّہَ ہُوَ السَّمیعُ الْبَصیرُ ۔

ترجمہ

۱۸۔ انہیں اس دن سے ڈرایئے جو قریب ہے کہ جب سخت خوف کی وجہ سے دل حلق تک پہنچ جائیں گے اوران کاتمام وجود غم واندوہ سے بھرجا ئے گا . ظالموں کانہ تو کوئی دوست ہوگااورنہ کوئی ایسا شفاعت کرنے والاکہ جس کی شفاعت مانی جائے ۔
۱۹۔ وہ ان آنکھوں کو بھی جانتاہے جوخیانت کرتی ہیں اورجوکچھ دل چھپا تے ہیں ان سے بھی باخبرہے ۔
۲۰۔ اوراللہ حق کے ساتھ فیصلہ کرتاہے اورخدا کے علاوہ وہ جن معبودوں کوپکار تے ہیں کچھ بھی فیصلہ نہیں کرسکتے .خداسننے والا اورجاننے والاہے ۔
جب جان لبوں تک پہنچے گی ملاقات کا دن
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma