دوسري دليل

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
ولايت کي واضح سند، حديث غدير
تيسري دليلدليل اول

دوسري دليل :

حضرت امير (عليہ السلام) نے جو اشعار معاويہ کو لکھے ان ميں حديث غدير کے بارے ميں يہ فرماياکہ واوجب لي ولايتہ عليکم رسول اللہ يوم غدير خم [1]
يعني اللہ کے پيغمبر نے غديرکے دن ميري ولايت کو تمھارے اوپر واجب قرارديا ۔
امام سے بہتر کون شخص ہے، جو ہمارے لئے اس حديث کي تفسير کرسکے ؟اوربتائے کہ غدير کے دن اللہ کے پيغمبر نے ولايت کو کس معني ميں استعمال کياہے ؟کيا يہ تفسير يہ نہيں بتا رہي ہے کہ واقعہ غدير ميں موجود تمام افراد نے لفظ مولا سے امامت کے علاوہ کوئي دوسرامعني نہيں سمجھا ؟

[1] مرحوم علامہ امينيۺ نے اپني کتاب الغدير کي دوسري جلد ميں صفحہ نمبر ۲۵ سے ۳۰ پر اس شعر کو دوسرے اشعار کے ساتھ ۱۱/ شيعہ علماء اور ۲۶ / سني علماء کے حوالہ سے نقل کيا ہے.
تيسري دليلدليل اول
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma