عزاداری میں نوحہ پڑھنا
صفحه کاربران ویژه - خروج
ورود کاربران ورود کاربران

LoginToSite

کلمه امنیتی:

یوزرنام:

پاسورڈ:

LoginComment LoginComment2 LoginComment3 .
ذخیره کریں
 

عزاداری میں نوحہ پڑھنا

سوال: کیا ایمہ (علیہم السلام) کے زمانہ میں بھی مام حسین (علیہ السلام) کی عزاداری پر نوحہ پڑھا جاتا تھا ؟
اجمالی جواب:
تفصیلی جواب: نوحہ پڑھنا یعنی امام حسین اور ان کے اصحاب کے متعلق غم ناک اشعار پڑھناجس کی وجہ سے مسلمانوں کے احساس وعواطف متحرک ہوں اور عاشورا کی یاد تازہ ہو ، نوحہ پڑھنے کاطریقہ بھی لوگوں کے درمیان ایک عام طریقہ ہے اوریہ طریقہ ایمہ معصومین کے زمانے میں بھی قایم تھا ۔
ایمہ اہل بیت (علیہم السلام) نوحہ خوان اور مرثیہ خوان کی تشویق کرتے تھے اور ان کو نوحہ سرایی، اشعار کہنے، کربلا کے حوادث اور بنی امیہ کے مظالم کو بیان کرنے کی ترغیب دلاتے تھے اور اس کام کے لیے ان کو بہترین پاداش دیتے تھے (١) ۔
امیرالمومنین اور حضرت زہرا نے بھی رسول اکرم کی رحلت کے بعد آپ کے غم میں اشعار کہے تھے(١) ۔
بہت سے سنی علماء نے بھی بہت سے اشعار جناب زہرای کی اپنے والدسے جدایی کے بیان میں اشعار کہے ۔
حاکم نیشاپوری لکھتا ہے: جس وقت رسول خدا کو دفن کردیا گیاتوحضرت زہرا نے انس سے خطاب کرکے فرمایا:
یاانس اطابت انفسکم ان تحثواالتراب علی رسول اللہ۔ ایے انس کیا تم راضی ہو کہ رسول خدا کے بدن پر خاک ڈالو؟
پھر فرمایا:
یا ابتاہ اجاب ربادعاہ
یا ابتاہ من ربہ ما ادناہ
یا ابتاہ جنه الفردوس ماواہ
یاابتاہ الی جبرییل انعاہ

والدگرامی! ایے وہ شخص جس نے خدا کی دعوت کو لبیک کہا، والدگرامی آپ اپنے پروردگار سے ملحق ہوگیے ۔
والدگرامی آپ کی جگہ بہشت مبارک ہو، والدگرامی میں تمہاری رحلت کی خبر جبرییل کو دوں گی(٣) ۔
اسی طرح ام سلمہ نے رسول خدا کی خدمت میں اپنے چچا کے لڑکے کی موت پراشعار کہے تھے اور بہت ہی غم واندوہ کے ساتھ ان اشعار کو پڑھا تھا(٤) ۔
امام باقر علیہ السلام نے اپنے بیٹے امام صادق کو وصیت کی کہ میرے مال سے کچھ حصہ وقف کردینا تاکہ دس سال تک اس سے کچھ نوحہ کہنے والے منی میں میرے لیے نوحہ پڑھیں(٥) ۔
حوالہ جات:
1. رجوع كنيد به: بحارالانوار، ج 22، ص 523 و 547 و ج 79، ص 106.
2 . مستدرك حاكم، ج 1، ص 382. همين ماجرا، جملات و اشعار، با اندكى تفاوت در صحيح بخارى، كتاب المغازى، باب مرض النبى و وفاته، حديث 30 آمده است.
3 . وسائل الشيعة، ج 12، ص 89، ح 2.
4 . وسائل الشيعة، ج 12، ص 88.
5 . کتاب عاشورا ریشه ها، انگیزه ها، رویدادها، پیامدها، زیر نظر آیت الله مکارم شیرازی، ص83.
    
تاریخ انتشار: « 1392/07/01 »

منسلک صفحات

امام حسین (علیہ السلام) کی عزاداری میں کام وغیرہ کی چھٹی کرنا

عزاداری میں سر وسینہ پیٹنا

عزاداری میں نوحہ پڑھنا

مجالس عزاداری منعقد کرنے کی وصیت

عزاداری میں سیاہ کپڑے پہننا

CommentList
*متن
*حفاظتی کوڈ غلط ہے. http://makarem.ir
قارئین کی تعداد : 1147